4 thoughts on “یکم نومبر عالمی اخبار کی ساتویں سالگرہ”

  1. عالمی اخبارکے ساتویں سالگرہ پر مبارکباد پیش کرتا ہوں اور ان احباب کی کاوشوں کا اعتراف کرتا ہوں جو دن رات اس کی خدمت کر رہے ہیں ، کسی آن لائن اخبار کو پابندی سے جاری وساری رکھنا آسان بات نہیں لیکن اس اخبار کے مدیران اور کالم نگاروں کے ساتھ ساتھ اس کے ایڈمین کے حوصلے کی داد دیتا ہوں کہ نہ صرف اسے جاری رکھا بلکہ اس طرح رفتار دی کی واقعی عالمی سطح پر اس کی مقبولیت میں اضافہ ہوا ہے ،
    سب کے لیے نیک تمائیں

  2. بہت بہت مبارک ہو ہمدانی صاحب۔ پتہ نہیں بلاگز کو کس کی نظر لگ گئ۔ منظور قاضی صاحب بھی اب فیس بک پر لکھ رہے ہیں۔ غالباً وہ منفی تبصروں سے دور رہنا چاہتے ہیں۔ خواہش اور کوشش تو میری بھی یہی رہی ہے- اختلاف اور منطق اپنی جگہ لیکن نکتہ چینی سے ہم جیسے لوگوں کو دور ہی رہنا چاہئے۔ ایک دوسرے سے استفادہ کرنا چاہئے۔ میں نے آپ سے بہت کچھ سیکھا ہے۔

    تم سلامت رہو ہزار ہرس
    ہر برس کے ہوں دن پچاس ہزار۔

  3. غزل

    تیغ و تفنگ ہی کا نہ ظلمو ستم کا ڈر
    ڈر ہے بس ہے گیسوء پر پیچ و خم کا ڈر
    اتنا نہیں ہے شیخ جی دیر وحرم کا ڈر
    جتنا مجھے ہے آپ کی چشمِ کرم کا ڈر
    وعدے پر اعتبار کے اب تو یہ حال ہے
    ہے رات دن لگا ہوا اُن کی قسم کا ڈر
    آدابِ بزمِ یار نے تو حوصلہ دیا
    بڑھتا رہا وہاں بھی مگر چشلِ نم کا ڈر
    جتنی گُذر رہی ہے یہ عمرِ رواں ظفر
    اتنا ہی بڑھ رہا ہے مرا بیش و کم کا ڈر

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *