بے حسی

دوستو ! آپ کی بارگاہ فکر میں محمد احمد کی ایک بہت ھی مرصع نظم جو دلوں کو ھلا کر رکھ دے ۔ جسے آج ھی زرقا مفتی نے ادبی صفحہ کی زینت بنایا ھے ۔ مجھ سے رہا نہیں گیا تو Continue reading بے حسی

نالاں ہیں اک طرف تو مرے نام سے بھی وہ ۔ مسعود قاضی

مسعود قاضی نے تازہ غزل یہ کہکر مجھے بھجوای ہے کہ اس نے اسے اپنی محبوبہ کے نام منسوب کیا ہے:
نالاں ہیں اک طرف تو مرے نام سے بھی وہ
کرتے ہیں پھر بھی ذکر مرا ہر کسی سے وہ Continue reading نالاں ہیں اک طرف تو مرے نام سے بھی وہ ۔ مسعود قاضی

رات کی رات مجھے بزم میں رہنے دیجیے۔قمر جلالوی

میرثانی سید محمد حسین مرحوم ، استاد قمر جلالوی کے نام سے اردو کی دنیا میں مشہور تھے اور اپنے کلام کی ندرت اور سلاست اور سادگی اور خیالات کی انتہای سادہ انداز میں ترجمانی کے باعث ادب کی تاریخ میں اعلی مقام حاصل کرچکے ہیں۔ انکے کلام میں دقیق الفاظ کی نمایش ہر گزنہیں تھی وہ بالکل سادہ انداز میں ایسی بات کہتے تھے کہ و ہ سننے والوں کے دل میں اتر جاتی تھی۔ Continue reading رات کی رات مجھے بزم میں رہنے دیجیے۔قمر جلالوی

نگہت آپا حسب وعدہ غزل نذر کر رہا ہوں

زیاں سے چل پڑا تھا میں، نکل گیا تھا سود تک
مجھے بقا نہیں ملی نہیں ملی نمود تک

ہوائے شب گزیدگاں، کبھی یہاں کبھی کہاں
بھٹک رہی ہے شہر میں نجانے کن حدود تک Continue reading نگہت آپا حسب وعدہ غزل نذر کر رہا ہوں

ب سے بوٹ ، ب سے بش

یہ تو اس خالق و مالک کی مرضی ہے کہ وہ چاہے تو بوٹ کھانے والے سے زیادہ عزت اور شہرت اس بوٹ کو دیدے جو وقت کے کسی بہت بڑے جمہوریت کا راگ الاپنے والے آمر کو مارا جائے۔
ذرا دیکھیں تو دنیا بھر کے ٹی وی،اخبار،انٹرنیٹ کہ ان میں بش کی تصاویر کم اور اس بوٹ کی زیادہ ہیں جو بش کا الوادعی بوسہ لیتے لیتے رہ گیا۔
مزید پڑھنے کے لیئے اس لنک پر کلک کیجئے

طارق ہاشمی صاحب کے استاد سید نعیم حامد علی الحامد کی غزل

محترم طارق ہاشمی صاحب نے اپنے استاد محترم کی جو غزل میرے ختم شدہ بلا گ میں پیش کی ہے اس کے چند اشعار سے یہ بلاگ کی ابتدا کررہا ہوں ۔ باقی کے اشعار طارق ہاشمی صاحب اس بلاگ میں لکھ سکتے ہیں اور اپنے استاد محترم کا تعارف بھی پیش کرسکتے ہیں ۔ Continue reading طارق ہاشمی صاحب کے استاد سید نعیم حامد علی الحامد کی غزل

نظم۔۔۔۔ ہندو لہو مسلم لہو۔۔۔۔۔، آپا نگہت آپ کے حکم کی تعمیل میں

چلو کہ ہم تم لہو بدل لیں،،
لہو کے سارے نصاب بدلیں،، حساب بدلیں،، کتاب بدلیں
چلو کہ ہم تم لہو بدل لیں
ہم آب زم زم یا گنگا چل سے بھی صدیاں پہلے
خیال کن کی Continue reading نظم۔۔۔۔ ہندو لہو مسلم لہو۔۔۔۔۔، آپا نگہت آپ کے حکم کی تعمیل میں

تنہائی میں بھی تنہا نہیں رھتی ھوں

منظور بھائی آپ کے حکم پر اپنی نظم حاضر ھے جو دہ دن پہلے عالمی اخبار کے ادبی صفحے پر شائع ھوئی تھی ۔۔آپ سب کو بھی شامل کرتے ھوئے بزم ادب میں انتہائی Continue reading تنہائی میں بھی تنہا نہیں رھتی ھوں

غزل (بون شہر کے خوبصورت دریا رائن کے کنارے پر بیٹھ کر کہی گئی)

تمہارا خواب میری رات تک کو کھا گیا ہے
خیالِ شب کی بدارات تک کو کھا گیا ہے

ہوائے شوخیء صبحِ نمودِ شوق و جنوں
تمہارا قرب Continue reading غزل (بون شہر کے خوبصورت دریا رائن کے کنارے پر بیٹھ کر کہی گئی)

عالمی اخبار کی اک خبر

ابھی ابھی عالمی اخبار کی اک خبر پڑھی، عنوان تھا ” عیدالاضحی پر لالی ووڈ کی پانچ فلمیں نمائش کیلئے پیش”
پڑھ کر جہاں خوشی ہونی تھی کہ Continue reading عالمی اخبار کی اک خبر

تمہا رے چاہنے سے اور کیا ہوگا مری جاں

مجھے عید کے دن کینبرا سے فون آیا اور وہ تھا اس غزل کے خالق ارمان نجمی صاحب کا جو پیشے کے اعتبار سے سرجن ھیں اور ممبئی میں رھتے ھیں اور آجکل آسڑیلیا آئے ھوئے ھیں ۔ انہوں نے ھمارے اخبار کی شہرت اپنے دوستو سے سنی اور Continue reading تمہا رے چاہنے سے اور کیا ہوگا مری جاں